یمن جنگ برسی پر لندن میں سعودی شہریوں کی گاڑیاں توڑ پھوڑ کا نشانہ

یمن جنگ برسی پر لندن میں سعودی شہریوں کی گاڑیاں توڑ پھوڑ کا نشانہ

سینٹرل لندن میں اس ہفتے عرب شہریوں کی ملکیت گاڑیوں کو نشانہ بنایا گیااور تھوڑ پھوڑ کی گئی۔ کاروں کے اوپر لفظ “جنگ” لکھا گیا تھا۔ ایک امارتی شہری نے جب لندن کے شہریوں کو یہ سب کرتے دیکھا تو انھیں منع کرنے کی کوشش کی تو سپرے پینٹر حملہ آور نے ایک دم سے حملہ کر دیا اور امارتی شہری عبداللہ الحسینی کے سر پر ایک سے زیادہ دفعہ حملہ کیا۔
اس حادثے کو ایک سے زیادہ دفعہ آن لائن میڈیا ذرائع پر رپورٹ کیا گیا اور دنیا بھر میں سعودی شہریوں کے خلاف اس طرح کا رویہ اختیار کرنے کی شدید مذمت کی گئی ہے۔ الحسینی کے سر پر معمولی چوٹیں آئیں ، الحسینی نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے یمنی شہریوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میرے بہنوں اور بھائیوں میں دُعا کرتا ہوں کہ اللہ آپکے زندگیوں میں جلد سکون اور شادمانی لے آئے۔
اللہ کا شکر ہے کہ میں ٹھیک اور صحت یاب ہوں ۔ ہمیں بچپن سے سکھایا گیا ہے کہ جب بھی کچھ غلط ہو رہا ہو تو اسے دیکھ کر چپ مت بیٹھو بلکہ اسکے خلاف آواز اٹھاو اور یہ خاصیت ہماری فطرت میں ہے ۔ ہمارے ولی عہد شیخ زید ہمارے اندر اس خاصیت کا بیج بُو گئے ہیں اور اللہ شیخ زید کو جنت الفردوس میں جگہ عطاء فرمائے ۔ الحسینی پر حملہ کرنے والے شخص پر لندن عدالت میں کیس کر دیا گیا ہے جسکی سنوائی جاری ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں